اگرچہ کئی چاند تھے سر آسماں میں ناول کے علاوہ شخصیت نگاری، سیرت نگاری، تاریخ نگاری، تذکرہ نگاری، افسانہ نگاری، ہند یورپی تہذیب کا بیانیہ اور سب سے بڑھ کر مرقع نگاری کا اعلیٰ نمونہ نظر آتا ہے لیکن ان سب باتوں کے ساتھ ساتھ یہ ایک بہت بڑا تاریخی ناول بھی ہے جس کے […]

مزید پڑھیں

کئی چاند تھے سرِآسماں اردو کا ایک تاریخی دستاویزی ناول ہے۔ اس ناول میں تاریخ فہمی اپنے عروج پر ہے۔ یہ ناول نیم دستاویزی و نیم تاریخی ہے۔ تہذیبی اعتبار سے یہ ناول اٹھارویں اور انیسویں صدی کی برصغیر کی مٹتی ہوئی تہذیب کے حوالے سے ہے۔اس کے سیاق و سباق میں ہندوستان کا ایک […]

مزید پڑھیں