اس مضمون میں ایم۔ اے۔ او۔ کالج علی گڑھ سے فارغ التحصیل عبد الرحمٰن نامی مصنف کے “The Battle of Paloona”نامی کتاب سے ماخوذ ایک غیر معروف تاریخی ناول کا تجزیہ کیا گیا ہے۔ مقالہ نگار کے مطابق اُردو میں تاریخی ناول کا ایک عمومی انداز یہ ہے کہ ہیرو مسلمان مرد، ہیروئن غیر مسلم […]

مزید پڑھیں

“لسان الشعرا”بر عظیم کی قدیم ترین فارسی فرہنگوں میں سے ایک ہے جو سلطان فیروز شاہ تغلق کے دور حکومت (۷۵۲ھ۔۷۹۰ھ)کے دوران معرض تحریر میں آئی۔ فرہنگ کے مولف کے حالات زندگی مجہول و نامعلوم ہیں حتیٰ کہ اس کا اپنا نام و مقام بھی پردہ اخفا میں ہے۔ فرہنگ کے آغاز میں مختصر سا […]

مزید پڑھیں

اردو اور ہندی میں شروع دن سے ایک لسانی وحدت موجود تھی لیکن یہ وحدت انیسویں اور بیسویں صدی عیسوی کی سیاسی اور تہذیبی کش مکش کی نذر ہو گئی۔ متذکرہ حالات میں لسانی تفریق کا فروغ پانا فطری بھی تھا اور لازم بھی۔ ہندی اردو جھگڑے کا آغاز ۱۸۶۷ء میں اس وقت ہوا جب […]

مزید پڑھیں

نواب محسن الملک سرسید کے رفقا میں سےتھے۔ ان کی تصانیف اگرچہ زیادہ نہیں ہیں لیکن انھوں نے جو تحریر کیا اس میں ان کی روشن خیالی، بیدار مغزی، کثرتِ مطالعہ اور ادبی ذوق پایا جاتا ہے۔ ان کی تصانیف میں طبع زاد کتب، تہذیب الاخلاق کے لیے لکھے گئے مضامین، مکاتیب اور کچھ تراجم […]

مزید پڑھیں