قیام پاکستان کے بعد جن ترقی پسند ادیبوں نے شہرت حاصل کی ان میں شوکت صدیقی کا نام بہت نمایاں ہے۔ انھوں نے نئی مملکت کے شہری مسائل پر سب سے پہلے قلم اُٹھایا اور زندگی کو ادب کی فنی اور فکری اقدار سے جوڑنے کی سعی کی۔ انھوں نے اپنے افسانوں میں شہری اور […]

مزید پڑھیں

شوکت صدیقی اردو ادب کے نام وَر مصنفین کی صف میں شامل ہیں۔ یوں تو وہ بہترین افسانہ نگار کے طور پر پہچانے جاتے ہیں لیکن اگر یہ کہا جائے کہ ناول “خدا کی بستی” اور “جانگلوس”نے ان کی شہرت کو دوام بخشا تو غلط نہ ہوگا۔ شوکت صدیقی نے ناول”جانگلوس”میں پاکستانی معاشرے کے دو […]

مزید پڑھیں

کہانی زندگی کی ترجمان ہوتی ہے۔ ناول کی کہانی میں زندگی اپنے تمام تر مسائل، حسن اور بدصورتی کے ساتھ سامنے آتی ہے۔ کہانی زندگی کو متاثر بھی کرتی ہے اور زندگی سے متاثر ہوتی بھی ہے۔ اردو ناول میں معاشرے کے مختلف طبقات، ان کے مسائل اور ان کی نفسیات کی کارفرمائی دیکھنے کو […]

مزید پڑھیں

قیامِ پاکستان کے بعد نمایاں ہونے والے افسانہ نگاروں میں شوکت صدیقی کا نام سرِفہرست ہے۔ شوکت صدیقی نے ترقی پسند تحریک کے تسلسل کو جاری رکھنے کی کوشش کی۔ انھوں نے اپنے افسانوں میں ظلم، استحصال اور عدم مساوات جیسی برائیوں کے ساتھ ساتھ سیاسی گھٹن، سامراجی نظام اور جاگیردارانہ نظام پر قلم اُٹھایا۔ […]

مزید پڑھیں

شوکت صدیقی جیسے تخلیق کار معاشرے کو اپنی تحریروں کے ذریعے تنبیہ کرتے ہیں کہ اگر آج ہم نے نوجوان نسل کو سماجی بحران سے نہ بچایا تو آنے والے وقت میں ہمارا معاشرہ انتشار اور عدم توازن کا شکار ہو جائے گا۔ ناول خدا کی بستی میں شوکت صدیقی نے جن معاشرتی و سماجی […]

مزید پڑھیں