کہانی یا قصہ میں شامل اشخاص کے احوال و اطوار کا بیان کردار نگاری کہلاتا ہے۔ فکشن کی مختلف اصناف میں جو اشخاص واقعات کے سلسلے کی کڑی بنتے ہیں ان کی کوئی نہ کوئی انفرادی پہچان ہوتی ہے، جب اپنی اسی انفرادیت کی وجہ سے وہ فکشن میں بیان ہوتے ہیں، تووہ کردار بن […]

مزید پڑھیں

شمس الرحمٰن فاروقی کا ناول”کئی چاند تھے سرآسماں” اردو ادب کا رجحان ساز ناول ہے۔ اس نے جدید اردو فکشن میں ایک سنگ میل کی حیثیت حاصل کرلی ہے۔ فاروقی نے اس ناول میں معاصر تاریخ اور ہند اسلامی تہذیب وثقافت کو اٹھارویں اور انیسویں صدی کے تناظر میں پیش کیا ہے۔ در اصل اِس […]

مزید پڑھیں

شمس الرحمٰن فاروقی اردو ادب بالخصوص معاصر اردو فکشن کی تنقید کا ایک معروف نام ہے۔ انھیں بطور تنقید نگار، محقق اور ادیب ایک مسلمہ حیثیت حاصل ہےمگر اُن کی شہرت کا بڑاحوالہ تنقید نگاری ہے۔ اُن کا ادب کی تجدیدی تحریک سے قریبی تعلق ہے۔انھیں اردو ادب کی صنف داستان کا سنجیدہ قاری مانا […]

مزید پڑھیں

میر تقی میر کو جب بھی پڑھا جائے وہ ایک نئی شان سے ہمارے سامنے آتا ہے اور شاید  اسی وجہ سے انھیں ‘‘خداے سخن’’ کہا جاتا ہے۔ میرؔ کی یہ شان رنگ زمانہ کے ساتھ ساتھ بدلتی رہتی ہے اور ہر دور میں ایک نیا میر ؔہمارے سامنے آ کھڑا ہوتا ہے۔ یوں ہر […]

مزید پڑھیں

اقبال کا شمار ان شعرا میں ہوتا ہے جن پر  بے پناہ لکھا گیا ہے۔ زیرِنظرمضمون میں اقبال پر شمس الرحمٰن فاروقی جیسے معروف ادیب اور نقاد کی تنقیدی آرا پیش کی گئی ہیں۔ شمس الرحمٰن فاروقی نے اقبال پر شرح و بسط سے بحث کرتے ہوئے اقبال کو ایک عظیم شاعر اور اردو ادب […]

مزید پڑھیں