اقبال نے اپنے خطوط میں سماجی تفاعل اور سیاسی شعور کا اظہار کیا ہے۔ بہت سے نزاعی پہلوؤں پر انھوں نے بے باکی کے ساتھ لکھا ہے۔ چاہے وہ ردِقادیانیت ہو یا پھر رد بالشویک ازم۔ اقبال کے جناح کے نام انگریزی میں لکھے خطوط اس وقت کی عصری سیاست کے گواہ ہیں۔ اقبال کے […]

مزید پڑھیں

یہ خطبہ علامہ اقبال کے سات خطبات (تشکیل جدید الہٰیات اسلامیہ) میں سے دوسرا ہے۔ اس خطبے میں فلسفیوں کے غلط افکار و نظریات کا رد انھی کی زبان میں فلسفیانہ انداز میں کیا گیا ہے۔ اس لیے یہ خطبہ نہ صرف یہ کہ عام فہم نہیں بلکہ اتنا مشکل اور پیچیدہ ہے کہ اس […]

مزید پڑھیں

علامہ اقبال حکیم الامت ہیں اور محمد علی جناح قائداعظم ہیں۔ دونوں کا تصور قومیت اور وطنیت نظریاتی ہے۔ اور یہ یکسانیت صرف نظریے کی حد تک نہیں بلکہ دونوں کا لغت و بیانیہ بھی ایک ہی طرح کا ہے۔ الفاظ کے آہنگ کی یکسانی زبان اور طرز ادا کے فرق کے باوجود بڑی آسانی […]

مزید پڑھیں

اقبال کا شعری متن اپنے اندر کیا معنوی وسعت رکھتا ہے اس کے لیے ضروری ہے کہ اقبال کے کلام کی قرأت کا قرینہ سمجھا جائے۔ ان کی غزلیں اور نظمیں اپنے اندر علامتی پیرایہ بھی رکھتی ہیں جب کہ ان کے اسلوب کا تعلق بہت حد تک اپنے عہد کے تقاضوں سے بھی تھا۔ […]

مزید پڑھیں

چوں کہ علامہ اقبال خطاطی کے فن اور اسرار و رموز کو بہ خوبی سمجھتے تھے اور خط شکستہ میں باکمال تھے اس لیے انھوں نے اپنے کلام کی کتابت کے لیے عبدالمجید پروین رقم جیسے نابغۂ روزگار کا انتخاب کیا۔ عبدالمجید پروین رقم کلام اقبال کے کاتب تھے۔ وہ اپنے زمانے کے معروف خطاط […]

مزید پڑھیں