4 results found matching the keyword "".

منیر نیازی دراصل حسن و عشق کے شاعر ہیں۔ دنیا میں پھیلے ہوئے حُسن کو وہ نت نئے انداز میں بیان کرتے ہیں۔ منیر نیازی نے جہاں حُسن کے روایتی تصور کو اجاگر کیا ہے وہیں تصورِ حُسن کو وسیع معنوں میں استعمال کرتے ہوئے جو فضا مرتب کرتے ہیں وہ بھی مختلف ہے۔ وہ […]

مزید پڑھیں

منیر نیازی کا شمار جدید شاعری کے ان شعرا میں ہوتا ہے جنھوں نے نہ صرف جدید موضوعات کو اپنی شاعری میں جگہ دی بل کہ کلاسیکی عہد کے موضوعات سے بھی استفادہ کیا۔ انھی موضوعات میں سے ایک عورت کے  حسن اور خوب صورتی کا بیان ہے۔ ان کے ہاں عورت اور فطرت کے […]

مزید پڑھیں

۱۹۵۹ء میں منیر نیازی کا پہلا مجموعہ کلام تیزہوا اور تنہا پھول کے نام سے منظرِ عام پر آیا جو اپنے زمانے کی سیاسی و سماجی صورتِ حال کو بیان کرتا ہے۔ دوسرا مجموعۂ کلام جنگل میں دھنک تیسرا دشمنوں کے درمیان شام چوتھا ماہ منیر پانچواں چھ رنگین دروازے چھٹا ساعت سیارساتواں پہلی بات […]

مزید پڑھیں

اس مقالے میں منیر نیازی کی شاعری کے دو بڑے پہلوؤں، کرب ناک کیفیت اور مافوق الفطرت عناصر کا تجزیہ کیا ہے۔ منیر نیازی کی شاعری میں کرب کی کیفیت کے پس منظر میں قیام پاکستان کے بعد کا تہذیبی زوال نظر آتا ہے۔ ہجرت کے تجربے اور ناسٹیلجیا کے باعث ان کی شاعری میں […]

مزید پڑھیں