5 results found matching the keyword "".

اس مضمون میں ایم۔ اے۔ او۔ کالج علی گڑھ سے فارغ التحصیل عبد الرحمٰن نامی مصنف کے “The Battle of Paloona”نامی کتاب سے ماخوذ ایک غیر معروف تاریخی ناول کا تجزیہ کیا گیا ہے۔ مقالہ نگار کے مطابق اُردو میں تاریخی ناول کا ایک عمومی انداز یہ ہے کہ ہیرو مسلمان مرد، ہیروئن غیر مسلم […]

مزید پڑھیں

سوروکن نے سماجی مقام کا تصور دیا۔ یہ نظریہ معاشرے میں آدمی کے افقی و عمودی سماجی مقام کے تعین میں معاون ہے۔ ناول ایک علامتی صنف ہے جس میں ادیب اپنے کرداروں کے سماجی مرتبے کی تشکیل کو ممکن بناتاہے۔ اس مقالے میں کرداروں کو دیا گیا مقام اور اُس کی پیش قدمی کو […]

مزید پڑھیں

اس مقالے میں ناول امراؤ جان ادا کا سماجی تبدیلی کے تصور کی روشنی میں جائزہ لیا گیا ہے۔ امیرن کا امراؤ بننا معیشت کے اعتبار سے بہتری کا حامل ہے۔ سماجی تبدیلی بہتری کے دو بنیادی اشاریے رکھتی ہے، پہلی صورت میں کم تر معاشرتی یا معاشی حیثیت کے کردار کا بہتر حیثیت کے […]

مزید پڑھیں

مجالس النساکے اسلوب کی جس خوبی کا ذکر لکھنے والوں نے کیا ہے وہی اس کا دائرہ کار کی حدود اور معیار سازی کا سبب ہے۔ اس کتاب کا مجموعی اسلوب ایک مخصوص نسوانی گروہ کے روزہ مرہ اور محاورے کی چھاپ لیے ہوئے ہے۔ اسلوب کو بین الصوبائی بنانے کے بجائے اشرافِ ثقافت کے […]

مزید پڑھیں

انیسویں صدی کے نصف آخر میں اردو دنیا پر اصلاح پسندی کا رجحان غالب تھا۔اردو کے معروف شاعر شاد عظیم آبادی نے بھی اس رجحان کی نمائندگی کرتے ہوئے ایک کتاب صورتِ حال تحریر کی۔ یہ کتاب اردو تہذیب کے سفر میں ایک اہم موڑ کو سمجھنے میں معاون ہے۔ اس کتاب میں مصنف نے […]

مزید پڑھیں