5 results found matching the keyword "".

دیگر مابعد الطبیعیاتی عناصر کی طرح عشق کا عنصر بھی تصوف کے راستے غزل میں داخل ہوا۔ صوفیا نے انسان کی تربیت و اصلاح اور روحانی ترقی کے لیے محبتِ الہٰی کو ضروری قرار دیا۔ وحدت الوجود کے حامیوں کے نزدیک مجاز حقیقت کا پل ہے۔ وحدت الوجود کا موضوع شعری روایت میں اس قدر […]

مزید پڑھیں

غالب اردو کے فلسفی شاعر ہیں۔ وہ زندگی اورکائناتی حقیقت کے مسائل کوگہرے فلسفیانہ انداز میں زیر بحث لاتے ہیں۔ اگرچہ ا نھوں نے اقبال کی طرح ایک مربوط فلسفیانہ فکر پیش نہیں کی تاہم ان کی شاعری میں مابعد الطبیعیاتی عناصر جابجا پائے جاتے ہیں۔ غالب کو فلسفیانہ مسائل پرلکھنے کا ملکہ حاصل تھا۔ […]

مزید پڑھیں

یونانی فلسفے میں سریت کو بہت اہم مقام حاصل ہے۔ یونان میں مابعد الطبیعیاتی تفکر کا آغاز مادیت سے ہوا۔ طالیس ملطی نے پہلی مرتبہ مبدا کائنات پر غورو خوض کرنے کا آغاز کیا۔ یونانی فلسفیوں کے مادہ پرست گروہ کے نزدیک کائنات، سالماتِ مادی  کے امتزاج سے خود بخود پیدا ہوگئی ہے۔ اس کا […]

مزید پڑھیں

نوعِ انسانی کے لیے ذات باری تعالیٰ کے تعارف کا ذریعہ کلام الہٰی ہے جو قرآن مجید کی صورت میں ہمارے پاس موجود ہے۔اس میں جس طرح اللہ تعالیٰ نے اپنی ذات کا تعارف کروایا ہے اسی طرح اپنی صفات پر بھی روشنی ڈالی ہے۔یہ ذات اس قدر اعلیٰ و ارفع ہے کہ کائنات کی […]

مزید پڑھیں

علامہ بشیر حسین ناظم وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں برپا ہونے والی محافلِ نعت کے روح ورواں تھے۔ انھوں نے نعت کے بنیادی مآخذ و مراجع، قرآن مجید اور احادیث مبارکہ کے ساتھ ساتھ اساتذۂ فن کے کلام کی طرف بھی لوگوں کو متوجہ کیا۔ انھوں نے نعت میں رواج پا جانے والے کئی الفاظ […]

مزید پڑھیں