مقالہ نگار: صدیقہ، طاہرہ نئی اردو شاعری کا اسلوب:افتخار جالب اور جیلانی کامران کے تناظر میں

تحقیقی زاویے : مجلہ
NA : جلد
7 : شمارہ
2016 : تاریخ اشاعت
شعبۂ اردو، الخیر یونی ورسٹی، بھمبر : ناشر
رشید امجد : مدير
NA : نايب مدير
Visitors have accessed this post 11 times.

نئی شاعری سے مراد وہ تخلیقات ہیں جو ۱۹۵۸ء کے لگ بھگ منظرِ عام پر آنے لگیں۔ ان منظومات کے لیے نئی شاعری کی ترکیب اس لیے استعمال کی جا سکتی ہے کہ یہ تخلیقات معانی، لب و لہجے اور سانچے کے اعتبار سے ماقبل نسل کی نظموں سے کافی حد تک مختلف ہیں۔ اس مقالے میں نئی اردو شاعری کے اسلوب پر بحث کی گئی ہے۔ مقالے کا موضوع دو شعرا افتخار جالب اور جیلانی کامران  ہیں جو نئی شاعری کے حوالے سے نمائندہ ہیں اور مروجہ اسلوب سے انکار کر کے الفاظ کا سیاق و سباق بدلنے کے حوالے سے معروف ہیں۔