مقالہ نگار: جبیں، زبیدہ مکاتیب: رشید حسن خان بنام محمد طفیل

تحقیق : مجلہ
NA : جلد
25 : شمارہ
2013 : تاریخ اشاعت
شعبۂ اردو، سندھ یونیورسٹی، جام شورو : ناشر
سید جاوید اقبال : مدير
NA : نايب مدير
Visitors have accessed this post 3 times.

رشید حسن خان اردو کے نام ور محقق، مدون اور نقاد ہیں-تحقیق اور تدوین متن کے شعبے میں اردو کا کوئی محقق رشید حسن خان کا ہمسر نظر نہیں آتا-‘‘فسانۂ عجائب ”، ‘‘باغ و بہار ”، ‘‘مثنوی گلزار نسیم ”، ‘‘سحر البیان ”، ‘‘مثنویاتِ شوق ” ان کے مخصوص اور معیاری اسلوب اور تحقیق و تدوین کی ایسی مثالیں ہیں جنھیں نمونے کی تدوینیات کہا جاتا ہے- رشید حسن خان اپنے نام آنے والے ہر خط کا جواب دیتے تھے- از خود بھی دوست احباب کو خط لکھتے رہتے تھے- انھوں نے سینکڑوں نہیں ہزاروں خطوط لکھے ہوں گے- ان کے خطوط کا پہلا مجموعہ ۶۳ خطوط پر مشتمل ہے جبکہ دوسرے مجموعے میں گیارہ سو سے اوپر خطوط شامل ہیں- اندازہ ہے کہ اصحاب علم و ادب کے ذخیروں میں ان کے کئی خطوط محفوظ ہوں گے- اس مقالے میں رسالہ‘‘نقوش’’ کے بانی اور مدیر جناب محمد طفیل کے نام رشید حسن خان کے دس خطوط پیش کیے گئے ہیں- یہ خطوط گورنمنٹ کالج یونی ورسٹی، لاہور کے حفاظت خانے میں محفوظ ہیں-