مقالہ نگار: عثمانی، محمد ہارون شعور کی رو

بازیافت : مجلہ
25 : جلد
NA : شمارہ
2014 : تاریخ اشاعت
شعبۂ اردو، اورینٹل کالج، پنجاب یونی ورسٹی، لاہور : ناشر
محمد کامران : مدير
NA : نايب مدير
Visitors have accessed this post 17 times.

شعور کی رو کی اصطلاح پہلے امریکی ماہر نفسیات ولیم جیمس نے اپنی کتاب ‘‘اصولِ نفسیات’’ میں پیش کی۔ ولیم جیمس کے نزدیک شعور جامد چیز نہیں بلکہ متحرک شے ہے۔ مغرب میں ادیبوں نے "شعور کی رو" کی تکنیک کو عروج تک پہنچایا۔ یہی وجہ ہے کہ مغربی ادب میں یہ تکنیک ایک مضبوط تحریک بن چکی ہے لیکن جب اردو ادب کی بات کی جائے تو تھوڑی مایوسی ہوتی ہے۔ اردو ادب میں شعور کی رو کی تکنیک کے حوالے سے چند ناول نظرآتے ہیں جبکہ "انگارے" کو اس حوالے سے پہلا قدم مانا جاتا ہے۔ مقالہ نگار کے مطابق حسن عسکری، انور سجاداورکرشن چندر نے اس تکنیک کا استعمال عمدہ طریقے سے کیاہے۔