مقالہ نگار: حسین، عشرت ترجمہ: کچھ حقیقتیں خدا کی بستی……. کراچی کے نئے سماج کے عدم توازن کی کہانی

آرٹس اینڈ لیٹرز : مجلہ
NA : جلد
NA : شمارہ
2016 : تاریخ اشاعت
شعبۂ اردو، اسلامیہ کالج یونی ورسٹی، پشاور : ناشر
محمد عباس : مدير
NA : نايب مدير
Visitors have accessed this post 4 times.

شوکت صدیقی جیسے تخلیق کار معاشرے کو اپنی تحریروں کے ذریعے تنبیہ کرتے ہیں کہ اگر آج ہم نے نوجوان نسل کو سماجی بحران سے نہ بچایا تو آنے والے وقت میں ہمارا معاشرہ انتشار اور عدم توازن کا شکار ہو جائے گا۔ ناول خدا کی بستی میں شوکت صدیقی نے جن معاشرتی و سماجی ناہمواریوں کی نشاندہی کی تھی وہ آج بھی ہمارے معاشرے میں موجود ہیں۔