مقالہ نگار: الماس،روبینہ اردو ناول میں طبقاتی شعور

خیابان : مجلہ
NA : جلد
25 : شمارہ
2011 : تاریخ اشاعت
شعبۂ اردو، جامعہ پشاور، پشاور : ناشر
بادشاہ منیر بخاری : مدير
NA : نايب مدير
Visitors have accessed this post 7 times.

کہانی زندگی کی ترجمان ہوتی ہے۔ ناول کی کہانی میں زندگی اپنے تمام تر مسائل، حسن اور بدصورتی کے ساتھ سامنے آتی ہے۔ کہانی زندگی کو متاثر بھی کرتی ہے اور زندگی سے متاثر ہوتی بھی ہے۔ اردو ناول میں معاشرے کے مختلف طبقات، ان کے مسائل اور ان کی نفسیات کی کارفرمائی دیکھنے کو ملتی ہے۔ ڈپٹی نذیر احمد، رتن ناتھ سرشار، مرزا محمد ہادی رسوا، پریم چند، قرۃالعین حیدر، حیات اللہ انصاری، قاضی عبدالستار، عبداللہ، جیلانی بانو، خدیجہ مستور، انتظارحسین، رضیہ فصیح احمداور شوکت صدیقی کے ہاں غریب، متوسط اور اشرافیہ الغرض ہر طبقہ کے افراد کی سوچ، نفسیات اور مسائل کی طرف توانا اشارے دیکھنے کو ملتے ہیں۔